کراچی میں پانی کی چوری کیخلاف آپریشن کا فیصلہ | اردو میڈیا

admin
admin 6 مئی, 2022
Updated 2022/05/06 at 8:21 صبح
284952 010111 updates
284952 010111 updates

سندھ میں پانی کی تقسیم کا مسئلہ ہے، پانی کی لائن بچھانےکیلئے پرانی واٹر سپلائی پائپس تبدیل کرنی ہوں گی: وزیراعلیٰ سندھ/ فائل فوٹوکراچی: سندھ حکومت نے شہر میں پانی چوری کے خلاف آپریشن کا فیصلہ کیا  ہے۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرصدارت واٹر بورڈ کا اجلاس  ہوا جس میں صوبائی وزیر سعید غنی، ناصرشاہ، چیف سیکرٹری اور واٹر بورڈ کے حکام شریک ہوئے۔اجلاس میں متعلقہ حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کراچی کو 1000 ایم جی ڈی پانی کی ضرورت ہے اور اس وقت کراچی کو 580 ایم جی ڈی پانی کی سپلائی جاری ہے، پانی کے 174ایم جی ڈی لائن لوسز ہیں۔اجلاس میں بتایا گیا کہ شہر میں بچھائی ہوئی پانی کی لائنیں بہت پرانی ہیں جس وجہ سے پانی ضائع ہوتا  ہے۔دورانِ اجلاس وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ میں پانی کی تقسیم کا مسئلہ ہے، پانی کی لائن بچھانےکیلئے پرانی واٹر سپلائی پائپس تبدیل کرنی ہوں گی،  واٹرسپلائی سسٹم کو بہترکرنےکیلئے 1.59 ملین روپےکی اسکیم جاری ہے۔وزیراعلیٰ نے آئندہ مالی سال میں کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی اسکیم کو پوری فنڈنگ دینے کا فیصلہ کیا اور ساتھ ہی اسکیم پر کام تیز کرنے کے احکامات بھی جاری کیے۔مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ اسکیم پر کام سست روی کا شکار ہے اس کو تیز کریں،شہر کے ہر علاقے کو پانی ملنا چاہیے۔وزیراعلیٰ سندھ نے شہر میں پانی کی چوری کے خلاف آپریشن کا بھی فیصلہ کیا۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

AllEscort