سینئر صحافیوں کا آئی ایس پی آر کے بیان پر ردعمل | اردو میڈیا

admin
admin 9 مئی, 2022
Updated 2022/05/09 at 3:56 صبح
285153 085931 updates
285153 085931 updates

گزشتہ روز آئی ایس پی آر نے کہا کہ مسلح افواج کو بہترین ملکی مفاد میں سیاسی گفتگو سے دور رکھیں۔ فوٹو: فائلسینئر صحافیوں اور تجزیہ کاروں نے پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے بیان پر  اپنے ردعمل کا اظہار کیا ہے۔سینئر صحافیوں نے کہا کہ پاک فوج نے واضح کر دیا ہے کہ سیاسی معاملات میں فوج کو گھسیٹنا ملکی سلامتی اور فوج کے لیے ٹھیک نہیں ہے، اس چیز کو ٹھیک ہونا چاہیے۔سینئر صحافی حامد میر نے کہا کہ پاک فوج کا بیان پاکستان کے صحافیوں، جمہوریت پسند دانشوروں کے مؤقف کی تصدیق کرتا ہےکہ فوج کو سیاست میں ملوث نہ کیا جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر فوج کہہ رہی ہے کہ اسے حلف کے مطابق چلنا ہے، سیاست میں مداخلت نہیں کرنی تو اس سے کون اختلاف کر سکتا ہے۔سینئر تجزیہ کار سلیم صافی نے کہا کہ فوج کی خواہش اور کوشش ہے کہ اسے سیاست سے دور رکھا جائے، وہ اپنے آپ کو آئین و قانون تک محدود رکھنا چاہتے ہیں، پاک فوج سے نیوٹرل نہ رہنے کا مطالبہ بنیادی طور پر آئین شکنی ہے۔سینئر صحافی مظہر عباس نے کہا کہ سیاسی رہنماؤں کی سطح پر نیوٹرل کو جس طرح بیان کیا جا رہا ہے اس کا بہرحال نوٹس لیا گیا ہے، قومی سلامتی اور فوج کے معاملات پر اظہارِ خیال میں احتیاط برتنی چاہیے۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

AllEscort