ضمانت مسترد کا تفصیلی فیصلہ جاری | اردو میڈیا

admin
admin 22 December, 2022
Updated 2022/12/22 at 12:50 PM
3 Min Read
311135 105035 updates
311135 105035 updates

اعظم سواتی نےمصدقہ ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ریاستی اداروں کے خلاف مہم چلائی، انہوں نے افواجِ پاکستان کے افسران کے خلاف بغاوت پر اکسانے کی کوشش کی: عدالت/ فائل فوٹواسپیشل جج سینٹرل اسلام آباد نے متنازع ٹوئٹ کیس میں پی ٹی آئی  رہنما اعظم سواتی کی درخواست ضمانت خارج ہونے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا۔اسپیشل جج سینٹرل اعظم خان نے 6 صفحات پرمشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کیا جس میں کہا گیا ہےکہ اعظم سواتی نےمصدقہ ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ریاستی اداروں کے خلاف مہم چلائی، انہوں نے افواجِ پاکستان کے افسران کے خلاف بغاوت پر اکسانے کی کوشش کی، اعظم سواتی نے ریاستی اداروں کےخلاف بغاوت پرمبنی ٹویٹس متعدد بارکیں، انہوں نے عوام کو اداروں کےخلاف اکسایا۔فیصلے میں کہا گیا ہےکہ افواجِ پاکستان کے افسران کے خلاف اعظم سواتی کی ٹوئٹ کو کئی لوگوں نے ری ٹوئٹ کیا، اعظم سواتی پر لگی دفعات پرکم ازکم7 سال اور زیادہ سے زیادہ عمرقید کی سزا ہو سکتی ہے۔فیصلے میں مزید کہا گیا ہےکہ اس سے قبل اعظم سواتی پر ریاستی اداروں کےخلاف بیان دینے پر مقدمہ درج کیا گیا تھا، انہوں نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے بار بار ریاستی ادارے کے افسر کے خلاف ٹوئٹ کی، اعظم سواتی نے ایک ہی جرم کو دہرایا ہے لہٰذا ان کی درخواست ضمانت خارج کی جاتی ہے۔

The detailed decision of the rejection of bail is issued Urdu Media

Azam Swati campaigned against state institutions with a verified Twitter account, tried to incite rebellion against Pakistan Army officers: Court/File Photo Special Judge Central Islamabad granted bail to PTI leader Azam Swati in the controversial tweet case. Detailed decision of expulsion issued. Special Judge Central Azam Khan issued a detailed decision containing 6 pages, in which it is said that Azam Swati campaigned against state institutions through a verified Twitter account, he incited mutiny against the officers of the Pakistan Army. Azam Swati posted a number of tweets based on rebellion against state institutions, he incited people against the institutions. The decision said that Azam Swati’s tweet against the officers of the Pakistan Army was retweeted by many people, on Azam Swati. The relevant provisions can be punished with imprisonment for a minimum of 7 years and a maximum of life imprisonment. The decision further states that earlier, Azam Swati was booked for making statements against the state institutions. Tweeted against the officer, Azam Swat He has repeated the same offense so his bail application is rejected.

Share this Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *